اگر یہ کہہ دو بغیرمیرے — نہیں گزارہتو میں تمھارا 

اگر یہ کہہ دو بغیرمیرے —— نہیں گزارہ

تو میں تمھارا 

یا اس پہ مبنی کوئی تاثر —— کوئی اشارہ 

تو میں تمھارا 

غرور پرور ———– انا کا مالک 

کچھ اس طرح کے ھیں—- نام میرے 

مگر قسم سے جو تم نے اک نام بھی پکارا 

تو میں تمھارا 

تم اپنی شرطوں پہ ﮐﻬﯿﻞ کھیلو

میں جیسے چاہوں لگاؤں بازی 

اگر میں جیتا تو تم ھو میرے —– اگر میں ہارا 

تو میں تمھارا 

تمھارا عاشق , تمھارا مخلص

تمھارا ساتھی , تمھارا اپنا

رہا نہ ان میں سے کوئی دنیا میں —- جب تمھارا 

تو میں تمھارا 

تمھارا ھونے کے فیصلے کو 

میں اپنی قسمت پہ چھوڑتا ھوں

اگر مقدر کا کوئی ٹوٹا —– کبھی ستارہ 

تو میں تمھارا 

یہ کس پہ تعویز کر ﺭﮨﮯ ھو ؟

یہ کس کو پانے کے ھیں وظیفے 

ﺗﻤﺎﻡ ﭼﻬﻮﮌﻭ ﺑﺲ ﺍﯾﮏ ﮐﺮ ﻟﻮ —— ﺟﻮ استخارہ 

تو میں تمھارا

Advertisements
This entry was posted in Sad Ghazals and tagged , , , , , . Bookmark the permalink.

Leave a Reply

Fill in your details below or click an icon to log in:

WordPress.com Logo

You are commenting using your WordPress.com account. Log Out /  Change )

Google+ photo

You are commenting using your Google+ account. Log Out /  Change )

Twitter picture

You are commenting using your Twitter account. Log Out /  Change )

Facebook photo

You are commenting using your Facebook account. Log Out /  Change )

Connecting to %s